Sitting on 10th November 2020

Print

List of Business

 

نظرثانی شدہ

 

 

صوبائی اسمبلی پنجاب

 

 

منگل 10۔نومبر2020 کو 2:00بجے دن منعقد ہونے والے اسمبلی کے اجلاس کی فہرست کارروائی

 

 

تلاوت  اور نعت

 

......

 

 سوالات

 

محکمہ ہائر ایجوکیشن سے متعلق سوالات

 

دریافت کئے جائیں گے اور ان کے جوابات دیئے جائیں گے۔

 

 

غیرسرکاری ارکان کی کارروائی

 

                                                                                                                                                                                                                                                

 

حصہ اول

 

 

 

(مسودہ     قانون)

 

                   THE PUNJAB EMERGENCY SERVICE  (AMENDMENT) BILL 2020.

 

 

 

 

 

MS KHADIJA UMER :

 

 

MS KHADIJA UMER :

to move that leave be granted to introduce the Punjab Emergency Service (Amendment) Bill 2020.

 

to introduce the Punjab Emergency Service (Amendment) Bill 2020.

 

.........

 

 

                                                                                                                                                                                                                                               

 

حصہ دوم

 

 

 

 

(مفاد عامہ سے متعلق قراردادیں)

 

 

.1

محترمہ خدیجہ عمر :

یہ ایوان ان خبروں پر تشویش کا اظہار کرتا ہے کہ نجی میڈیکل کالج نئے داخلوں کے لئے سالانہ فیسوں میں بےپناہ اضافہ کر رہے ہیں، جس سے میڈیکل کی تعلیم کو نہ صرف مزید ناجائز منافع کا ذریعہ بنایا جا رہا ہے بلکہ دوسری طرف ایسے طلباء جو کم مارجن سے پبلک سیکٹر کے میڈیکل کالجوں میں سیٹوں کی محدود تعداد ہونے کی وجہ سے داخلہ حاصل نہیں کر سکتے ان پر فیسوں کے مبینہ اضافہ سے نجی میڈیکل کالجوں کے دروازے بند کئے جا رہے ہیں۔ نجی میڈیکل کالجوں کی فیسوں کو کنٹرول کرنے کے لئے حکومت کو بروقت کارروائی کرنی چاہئے۔
لہذا یہ ایوان حکومت سے پرزور مطالبہ کرتا ہے کہ نجی میڈیکل کالجوں کو فیسوں میں اضافے سے  روکا جائے اور فیسوں کے حوالے سے ضروری قانون سازی کی جائے۔

 

.........

 

 

.2

میاں مناظر حسین رانجھا:

حلقہ PP-74 کوٹ مومن ضلع سرگودھا میں واں میانہ ڈرین، اس کی سب برانچیں اور بڈھی سیم نالہ کے علاوہ اور بھی سیم نالے موجود ہیں جن کی صفائی نہ ہونے کی وجہ سے اس سال بارشوں کے سیزن میں پانی اتنا overflow ہوا کہ حلقہ بھر کے غریب کسانوں کی زمینوں میں چاول، مکئی اور گنے کی کھڑی فصلات کے ساتھ ساتھ باغات بھی تباہ ہو گئے ہیں، جس سے کسانوں کا کروڑوں روپے کا نقصان ہوا ہے۔ ان ڈرینز اور نالوں سے نکلا ہوا پانی ابھی تک فصلات اور زمینوں میں کھڑا ہے، جس سے خدشہ ہے کہ آئندہ گندم کی فصل بروقت کاشت نہیں ہو سکے گی۔ لہذا پنجاب کا یہ منتخب ایوان حکومت سے اس امر کا مطالبہ کرتا ہے کہ حلقہ PP-74 میں موجود تمام ڈرینز، سب ڈرینز اور نالوں کی فوری طور پر مشینوں کے ذریعے صفائی کرائی جائے تاکہ زمینوں اور فصلات میں موجود پانی drain  ہو سکے اور آئندہ اس حلقے کے غریب کسانوں کی فصلات، باغات اور زمینیں محفوظ رہ سکیں۔

 

........

 

.3

محترمہ عظمیٰ کاردار :

اس ایوان کی رائے ہے کہ حکومت پنجاب کے زیر انتظام تمام جامعات، سکولوں، ٹیکنیکل کالجوں، سپیشل ایجوکیشن کے اداروں و دیگر تمام غیرسرکاری تعلیمی اداروں میں قرآن پاک ترجمہ کے ساتھ پڑھانے کا فی الفور اہتمام کیا جائے۔

 

.........

 

.4

شیخ علاؤالدین :

اس ایوان کی رائے ہے کہ Rattigan Road لاہور پر واقع Bradlaugh Hall
کا جنگ آزادی میں بہت بڑا مقام ہے۔ لہذا یہ ایوان وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے سفارش کرتا ہے کہ اس کی تاریخی اہمیت کے پیش نظر اس کو فوری طور پر اصل شکل میں بحال کیا جائے اور عوام کو اس کی اہمیت سے روشناس کرایا جائے۔

 

.........

 

 

لاہور

محمد خان بھٹی

مورخہ: 10۔نومبر 2020

سیکرٹری

 

Summary of Proceedings

Not Available

Resolutions Passed

 

قرارداد نمبر: 76

 

محرک کا نام:  جناب محمد بشارت راجہ وزیر قانون

 

"صوبائی اسمبلی پنجاب کا یہ ایوان فرانس میں توہین آمیز خاکوں کی تشہیر اور فرانسیسی صدر کی جانب سے اس حوالے سے متنازعہ بیان کی پُرزور الفاظ میں مذمت کرتا ہے۔ اس طرح کے واقعات سے نہ صرف دُنیا بھر کے ڈیڑھ ارب سے زائد مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوتے ہیں بلکہ عالمی امن، بھائی چارہ اور بین المذاہب ہم آہنگی بھی شدید خطرے سے دوچار ہو جاتے ہیں۔ اس ایوان کی رائے ہے کہ اظہار رائے کی آزادی کی غلط تشریح کی جاتی ہے۔ ڈیڑھ ارب مسلمانوں کی دل آزاری کو اظہار رائے کی آزادی کا نام نہیں دیا جا سکتا۔ کینیڈا کے وزیراعظم نے بھی تسلیم کیا ہے کہ اظہار رائے کی آزادی، بغیر حدود و قیود کے نہیں ہو سکتی اور اس سے مختلف کمیونٹیز (برادریوں) کی بلاوجہ دل آزاری نہیں کی جانی چاہئے۔ امریکی ماہر فلکیات اور مورخ ڈاکٹر مائیکل ایچ ہارٹ نے 1978 میں شائع ہونے والی اپنی کتاب "تاریخ کی سو متاثر کن شخصیات کی درجہ بندی" میں خاتم النبیین حضرت محمدﷺ کو نہ صرف پہلا درجہ دیا بلکہ اس کا دفاع بھی کیا ہے۔ اس ایوان کی یہ رائے بھی ہے کہ فرد واحد کے کسی فعل کا ذمہ دار پوری کمیونٹی کو نہیں ٹھہرایا جا سکتا۔ جس طرح نیوزی لینڈ کی مسجد میں 51 مسلمانوں کو شہید کرنے والے شخص کے فعل کو عیسائیت یا یہودی مذہب سے نہیں جوڑا جا سکتا، اسی طرح کسی فرد کے انفرادی فعل سے مذہب اسلام کو منسلک کرنے کی اجازت بھی نہیں ہونی چاہئے۔ یہ ایوان وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ اس معاملے کو اقوام متحدہ سمیت ہر عالمی فورم پر اٹھایا جائے اور یہ مطالبہ کیا جائے کہ جس طرح ہولو کاسٹ کی تشہیر پر پابندیاں عائد ہیں، اسی طرح توہین رسالت کی تشہیر پر بھی پابندیاں عائد کی جائیں تاکہ اسلامو فوبیا پر قابو پایا جا سکے اور عالمی امن کو درپیش خطرے کے تدارک کا مستقل بندوبست کیا جائے۔

یہ ایوان وفاقی حکومت اور حکومت پنجاب کی جانب سے ہفتہ رحمت اللعالمینﷺ منانے کا خیر مقدم کرتا ہے اور اسے عالم اسلام کے مسلمانوں کے جذبات کی ترجمانی اور عالمی امن کی جانب ایک اہم قدم قرار دیتا ہے۔"

----------------

قرارداد نمبر: 77

 

محرک کا نام:  میاں شفیع محمد (پی پی۔258)

"اس ایوان کی رائے ہے کہ اس سال مونجی کی فصل زیادہ ہونے کی وجہ سے کسانوں کو اس کا ریٹ بہت کم مل رہا ہے جس سے پنجاب کا کسان بہت پریشان ہے۔ گزشتہ سال اس کا ریٹ 2300 روپے من تھا۔ لہذا یہ ایوان وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ Trading Corporation of Pakistan  کو کسانوں سے یہ فصل گزشتہ سال کے ریٹ یعنی 2300 روپے من کے حساب سے خریدنے کا انتظام کرے۔"