Sitting on 28th January 2020

Print

List of Business

 

صوبائی اسمبلی پنجاب

 منگل 28 جنوری 2020کو 3:00بجے سہ پہر منعقد ہونے والے اسمبلی کے اجلاس کی فہرست کارروائی

 تلاوت  اور نعت

 سوالات

 محکمہ سکولز ایجوکیشن سے متعلق سوالات

 دریافت کئے جائیں گے اور ان کے جوابات دیئے جائیں گے۔

 غیرسرکاری ارکان کی کارروائی

 حصہ اول

 (مسودہ     قانون)

                   THE PAKISTAN PENAL CODE (PUNJAB AMENDMENT) BILL 2020

 

SHEIKH ALLA-UD-DIN:

 

 

  SHEIKH ALLA-UD-DIN:

to move that leave be granted to introduce
the Pakistan Penal Code (Punjab Amendment)
Bill 2020.

 

to introduce the Pakistan Penal Code (Punjab Amendment) Bill 2020.

 حصہ دوم

 (مفاد عامہ سے متعلق قراردادیں)

 (مورخہ 31دسمبر 2019 کے ایجنڈے سے زیر التواء قراردادیں)

 

.1

جناب محمد منیب سلطان چیمہ:

اس ایوان کی رائے ہے کہ صوبہ کے اکثر  تعلیمی اداروں نے عوام کو لُوٹنے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔ ہر سکول یونیفارم، کاپیوں اور کتابوں کو از خود مہنگے داموں فروخت کرتا ہے اور تمام نجی تعلیمی ادارے ایسا یونیفارم، کاپیاں اور کتابیں تیار کرواتے ہیں جو مارکیٹ میں دستیاب نہ ہو اور مجبوراً  طلباء کو سکول سے یہ اشیاء مہنگے داموں خریدنی پڑتی ہیں۔ لہذا یہ ایوان حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ صوبہ کے تمام نجی تعلیمی اداروں کو پابند کیا جائے کہ وہ ایسے یونیفارم، کاپیوں اور کتابوں کا انتخاب کریں جو تمام تعلیمی اداروں میں یکساں ہوں اور باآسانی مارکیٹ میں دستیاب ہوں تاکہ بچوں کے والدین پر فیسوں کے بھاری بوجھ کے علاوہ مہنگا یونیفارم، کاپیوں اور کتابوں کو خریدنے کا بوجھ کم ہو سکے۔

 

[.2

محترمہ سبین گل خان :         

اس ایوان کی رائے ہے کہ  پانی انسانی زندگی کے لئے بنیادی ضرورت ہے لیکن عوام کی بڑی تعداد اس بنیادی ضرورت سے محروم ہیں۔ لہذا صوبائی اسمبلی پنجاب کا یہ ایوان حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 19۔الف میں دیئے گئے حق معلومات اور آرٹیکل 25۔الف میں دی گئی مفت اور لازمی تعلیم کی فراہمی کی طرح پاکستان کے ہر شہری کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کو بھی بطور بنیادی حق آئین میں شامل کیا جائے۔

 

.3

جناب محمد ایوب خان :

اس ایوان کی رائے ہے کہ دیگر صوبوں  کی طرز پر صوبہ پنجاب کے تمام سرکاری ملازمین کو اپنی مدت ملازمت مکمل ہونے کے بعد گروپ انشورنس کی رقم مع منافع ادا کرنے کے لئے
فی الفور قانون سازی کی جائے اور قواعد و ضوابط مرتب کئے جائیں۔

 

.4

چودھری افتخار حسین چھچھر :

اس ایوان کی رائے ہے کہ امراض قلب کی بڑھتی ہوئی شرح کے پیش نظر صوبہ بھر کے تمام اضلاع میں کارڈیالوجی سنٹرز کا قیام عمل میں لایا جائے۔

 (موجودہ قراردادیں)

 

.1

محترمہ آسیہ امجد :

اس ایوان کی رائے ہے کہ پاکستان میں آج بھی دُنیا بھر میں مسترد شدہ Road Studs یا Cat’s Eyes  سپیڈ بریکرز کے طور پر استعمال کئے جا رہے ہیں جو نہ صرف  گاڑیوں کے ٹائرز کو شدید نقصان پہنچا رہے ہیں بلکہ حادثات کا موجب بھی ہیں۔ لہذا یہ ایوان وفاقی حکومت اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ تمام سڑکوں سے ان Road Studs یا Cat’s Eyes کو فوری طور پر ہٹایا جائے اور گاڑیوں کی رفتار کو کم رکھنے کے لئے بین الاقوامی ٹریفک قوانین کے مطابق منظور شدہ سپیڈ بریکرز کا استعمال کیا جائے۔

 

.2

چودھری افتخار حسین چھچھر :

اس ایوان کی رائے ہے کہ صوبہ بھر کے سکولز میں مانیٹرنگ کیلئے تعینات MEA’s کی جانب سے خواتین اساتذہ کو ہراساں کرنے کے بےشمار واقعات رونما ہو چکے ہیں اور معزز اساتذہ کی تذلیل کی جاتی ہے۔ لہذا ان MEA’s کے کنٹریکٹ پورے ہونے پر انکو مزید کنٹریکٹ نہ دیا جائے۔ اساتذہ کو MEA’s سے نجات دلائی جائے تاکہ وہ انتھک محنت سے اپنی خدمات سرانجام دے سکیں۔

 

[.3

محترمہ عائشہ اقبال :

اس ایوان کی رائے ہے کہ لاہور کے حلقہ PP-160 اور NA-128 کے علاقہ کینال ویو میں ایک بھی سرکاری سکول نہیں ہے۔ لہذا یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ وہاں فی الفور سرکاری سکول تعمیر کیا جائے۔

 

.4

جناب محمد فیصل خان نیازی :

اس ایوان کی رائے ہے کہ سرکاری میڈیکل کالجز میں داخلہ کی سیٹیں بڑھائی جائیں اور Evening Shift  کا بھی اہتمام کیا جائے۔

 

لاہور

محمد خان بھٹی

مورخہ: 23 جنوری 2020

سیکرٹری

 

 

 

Summary of Proceedings

Not Available

Resolutions Passed

Not Available